صحت

چقندر کے حیرت انگیز فوائد ……کیا آپ کو معلوم ہے؟

موسم سرما میں چقندر کا استعمال بہت عام ہے، سلاد سے لے کر اس کا جوس کافی پسند کیا جاتا ہے۔ فائبر، فولیٹ، میگنیز، پوٹاشیم، آئرن اور وٹامن سی بھرپور چقندر متعدد جسمانی امراض سے تحفظ فراہم کرتا ہے۔ہائپر ٹینشن نامی جریدے میں ماہرین غذائیت کی شائع ہونے والی ایک نئی تحقیق میں کہا گیا ہے کہ چقندر کاجوس پینے سے بلڈ پریشر میں کمی ہوسکتی ہے ۔ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ اگر ہماری خوراک میں ا یسی سبزیاں استعمال کی جائیں جن میں نائٹریٹ شامل ہوتو ہم آسانی سے دل کی صحت کو بہتر کر سکتے ہیں ۔اس کا سلاد بھی بنایا جاتا ہے اور اسے ابال کر بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ اس کا جوس بھی بنایا جاتا ہے۔ چقندر کا جوس بنانے کے لیے اس کو ٹکڑوں میں کاٹا جاتا ہے اور گرینڈر کی مدد سے اس کا جوس نکال لیا جاتا ہے۔ عام طور پر اس کا جوس گاجر یا مالٹے کے جوس کے ساتھ مکس کر کے استعمال کیا جاتا ہے،
ہاضمے کی خرابی
یرقان یا کئی دوسری وجوہات کی بنا پر اگر آپ کا نظامِ انہضام خراب ہے یا آپ کو متلی، قے، یا اسہال کی شکایت ہے تو اس سبزی کا استعمال مفید ثابت ہو سکتا ہے۔ ہاضمے کی خرابی کو دور کرنے کے لیے اس کے رس میں ایک چمچ لیموں کا رس شامل کر کے پئیں،
داغ دھبوں سے چھٹکارا
چہرے کے داغ دھبے دور کرنے کے لیے چقندر کا استعمال کیا جا سکتا ہے۔ اس مقصد کے لیے ایک چقندر کو کاٹ کر پانی میں ابالیں۔ یہ پانی روئی کی مدد سے چہرے پر لگائیں اور پانچ سے سات منٹ بعد دھولیں۔ چہرہ خشک کرنے کے بعد گلاب کا عرق لگا لیں۔ چند دنوں بعد چہرے داغ دھبے کم ہونا شروع ہو جائیں گے۔چقندر کے مزید طبی فوائد کے متعلق معلومات حاصل کرنے کے لیے آپ کسی بھی غذائی ماہر سے رابطہ کر سکتے ہیں۔ اب کسی بھی غذائی ماہر سے آسانی کے ساتھ رابطہ کرنے کے لیے آپ ہیلتھ وائر کا پلیٹ فارم استعمال کر سکتے ہیں۔
دماغی طاقت کے لیے
دماغ کو صحت مند رہنے کے لیے زیادہ آکسیجن کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس لیے دماغ کو آکسیجن کی سپلائی بہتر بنانے کے لیے چقندر کا استعمال یقینی بنایا جاتا ہے۔ یہ سبزی مسلز کے ساتھ ساتھ دماغ کو بھی زیادہ آکسیجن پہنچاتی ہے اس لیے اسے سلاد یا جوس کی شکل میں استعمال کیا جا سکتا ہے۔
بلڈ پریشر کے لیے مفید
چقندر نائٹریٹ سے مالا مال ہوتی ہے جو ہضم ہونے کے دوران نائٹرک آکسائڈ میں تبدیل ہو جاتی ہے۔ نائٹرک آکسائڈ خون کی شریانوں کے پھیلاؤ میں مدد گار ثابت ہوتا ہے۔ چقندر کے جوس کا روزانہ استعمال ہائی بلڈ پریشر کی سطح کو کم کرنے میں بھی اہم کردار ادا کرتا ہے۔ ایسے افراد جن کو ہائی بلڈ پریشر کا مسئلہ لاحق تھا ان کو چار ہفتوں تک اڑھائی سو ملی لیٹر اس سبزی کا جوس استعمال کروایا گیا جس سے ان کے بلڈ پریشر میں واضح کمی آئی۔
کینسرسے بچاو
کچھ مطالعات سے ثابت ہوا ہے کہ چقندر کے استعمال سے کینسر کو پیدا ہونے سے روکنے میں انتہائی معاؤن کردار ادا کرتی ہیں۔اس میں موجود روغن جسم میں کینسر خلیوں کی افزائش کو کم کرنے میں مددگار ثابت ہوسکتا ہے۔
موٹاپا ختم کرنے کے لیے مفید
چقندر میں کم کیلوریز ہونے کیساتھ ساتھ پانی کی مقدار زیادہ ہوتی ہے اور ماہرین کا کہنا ہے کہ ایسے کھانے جن میں کیلوریز کم ہوں جیسے پھل سبزیاں وغیرہ جسم کی فاضل چربی کو پگھلانے میں اور وزن کم کرنے میں انتہائی اہم ہیں۔
جسمانی توانائی بڑھائے
نائٹرک آکسائیڈ کی بدولت خون کی شریانیں کشادہ ہوتی ہیں، اس سے مسلز کو زیادہ آکسیجن ملتی ہے جو کہ جسمانی توانائی کو دیر تک برقرار رکھنے میں مددگار ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق چقندر کا جوس نکال کر پینا جسمانی مشقت کے کاموں کے لیے توانائی بڑھاتا ہے۔
دل کی صحت کے لیے چقندر کے جوس کے فوائد
چقندر کے جوس میں بیتالین ہوتی ہے، جو جسم میں قدرتی طور پر ہومو سسٹین کو کم کرنے کے لئے ایک اہم مادہ ہے۔ جسم میں ہومو سسٹین کی گردش کے نظام کے لیےبہت ساری صحت کی پریشانیوں کا باعث بنتی ہے۔-چقندر کے جوس میں کافی مقدار میں پوٹاشیم عام طور پر فالج اور دل کی بیماریوں کے امکانات کو کم کرنے میں مدد کرتا ہے

.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button