پاکستانتازہ ترین

لاہور سمیت پنجاب میں دھند کا راج، حادثات، موٹر وے بند، پروازیں متاثر

لاہور سمیت پنجاب میں دھند نے اپنا راج قائم کر دیا۔ دھند کی وجہ سے متعدد علاقوں میں حادثات بھی ہوئے ۔لاہور میں ٹھوکر نیاز بیگ کے قریب ٹریفک حادثے میں موٹر سائیکل سوار زخمی ہوگیا ہے۔ شاہ کوٹ میں سانگلہ موڑ پر دھند کے باعث رکشا اور بس آپس میں ٹکرا گئے جس کے نتیجے میں 6 افرادا زخمی ہوئے۔ خان پور میں فیروزہ کے نزدیک کوچ اور ٹریکٹر ٹرالی میں تصادم کے سبب دو مسافر زخمی ہو گئے ۔
دھند کے باعث اکثر علاقوں میں حد نگاہ صفر ہو چکی ہے ۔جس نے شہریوں کے معمولات زندگی درہم برہم کردیے ہیں۔ فلائٹ آپریشن بھی جزوی طور پر متاثر ہے۔ لاہور کے علامہ اقبال ایئرپورٹ کے اطراف بھی شدید دھند ہونے کے باعث فلائٹ آپریشن جزوی طور پر متاثر ہے۔
موٹر وے ایم ٹو کو لاہور سے شیخو پورہ تک اور ملتان موٹرے کو فیض پور انٹرچینج ننکانہ صاحب تک بند کر دیا گیاہے ۔
سیالکوٹ موٹر وے کو مکمل بند کیا گیا ہے۔موٹر وے ایم فور پنڈی بھٹیا ں سے عبدالحکیم تک اور ایم فائیو شیر شاہ سے گھوٹکی تک بند کردیا گیا لاہور شہر اور مضافات میں شدید دھند چھائی ہوئی ہے اور حد نگاہ انتہائی کم ہے جس کے باعث لوگوں کی مشکلات بڑھ گئی ہیں بالخصوص گاڑی ڈرائیوروں کو ڈرائیونگ میں پریشانی کا سامنا ہے۔
شدید دھند میں احتیاط لازم ہے ۔ دھند میں ہیڈ لائٹ، بیک لائٹ کے علاوہ ڈبل اشارے لگا کر گاڑی چلائیں۔
شدید دھند میں فوگ لائٹ کا استعمال ضرور کریں۔دھند میں رفتار مناسب رکھیں۔ بہت زیادہ یا بہت کم رفتار نقصان دہ ہوسکتی ہے۔
دھند میں انتہائی ایمرجنسی کے علاوہ سڑک کے کنارے بھی گاڑی کھڑی نہ کریں۔دھند اور رات کے وقت ون وے کی خلا ف ورزی، بغیر لائٹوں کے سفر، غلط پارکنگ وغیرہ کے نتائج تباہ کن ثابت ہوسکتے ہیں۔خراب مو سم میں وائپر درست رکھیں اور اسکرین مع شیشے صاف رکھیں۔
شدید دھند میں ٹیپ ریکارڈر کی آواز کم سے کم رکھیں تاکہ آپ کا دھیان ٹریفک پر زیادہ سے زیادہ رہے اور آپ دیگر گاڑیو ں کی آواز سن کر ان کی آمد سے آگاہ ہوسکیں کیونکہ وزیبلیٹی بہت کم ہوتی ہے۔
دھند کی تعریف ان الفاظ میں کی جاتی ہے ۔
دھند (Fog) سطح زمین کے پاس آبی بخارات کا تکاثف جو عموماً نظر کو دھندلا دیتا ہے۔ دھند کو نشیبی فضا میں تیرتے ہوئے بادلوں کی ایک قسم سمجھا جا سکتا ہے اور یہ قریبی اجسام آب سے متاثر ہو سکتے ہیں۔
اس سلسلے میں ترجمان کا کہنا ہے کہ شہری کسی بھی معلومات اور مدد کے لیے ہیلپ لائن 130 سے رابطہ کریں جب کہ موٹر وے پولیس کی ’’ہمسفر‘‘ ایپ سے بھی معلومات حاصل کی جا سکتی ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button