تازہ تریندلچسپ و حیرت انگیز

تاج محل بھی نا دہندہ؟

بھارتی حکام نے پھرتی کا مظاہرہ کرتے ہوئے تاج محل کو 2 کروڑ روپے کا پراپرٹی ٹیکس اور پانی کا بل بھیج دیا۔جس سے حکام حیران رہ گئے .
بل میں آرکیولوجیکل سروے آف انڈیا (اے ایس آئی) کو حکم دیا گیا ہے کہ دو ہفتے میں تاج محل کا دو کروڑ روپے پر مشتمل ٹیکس اور پانی کا بل بھریں

یہ سب کو معلوم ہے کہ تاج محل پر ٹیکس لاگو نہیں ہوتا کیونکہ یہ ایک قومی ورثہ ہے۔ ایسے میں بل کا بھیجا جانا سمجھ سے بالا تر ہے .
انہوں نے کہا کہ تاج محل پانی کا بل بھی ادا کرنے کا مجاز نہیں کیونکہ یہاں صرف ہریالی کی دیکھ بھال کیلئے پانی استعمال ہوتا ہے، کمرشل بنیادوں پر نہیں۔دوسری طرف متعلقہ حکام نے آرکیولوجیکل سروے آف انڈیا کو آگرہ قلعے پر ’واجب الادا‘ 5 کروڑ روپے کی ادائیگی کی ہدایت دی ہے۔آگرہ قلعہ مغل بادشاہ اکبر نے تعمیر کیا تھا، یہ تاج محل سے ڈھائی کلومیٹر دور ہے۔
اس واقعے نے بھارت میں کھلبلی مچا دی اور ایک ادارے کے کام کرنے کو ملک بھر میں شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے .

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button