پاکستانتازہ ترین

عمران خان کا 26 نومبر کو اسلام آباد پہنچنے کا اعلان

تحریک انصاف کے چئیر مین عمران خان نے 26 نومبر کو اسلام آباد پہنچنے کا اعلان کر دیا ۔ انہوں نے لانگ مارچ کے شرکا سےخطاب کرتے ہوئے کہا سب اسلام آباد پہنچیں آپ سب سے ملاقات ہو گی اور وہاں اگلا لائحہ عمل دوں گا۔ ہمارا مطالبہ صرف صاف اور شفاف انتخابات ہیں۔ ہم اس لیے جدوجہد کر رہے ہیں تاکہ ہماری قوم کسی کی غلامی نہ کرے اور اپنے فیصلے خود کرے ۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک کا سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ یہاں انصاف نہیں ہے ۔ اعظم سواتی اور ارشد شریف کو انصاف نہیں مل سکا ۔ ارشد شریف ملک کے ساتھ ہوئی سازش کو سامنے لا رہا تھا ۔ ارشد شریف پر مقدمے بنائے گئے اور جان سے مارنے کی دھمکیاں دی گئیں ۔ اس طرح چلنے سے ملک کبھی کامیاب نہیں ہوسکتا ۔ برطانیہ میں کوئی قبضہ مافیا نہیں وہاں انصاف ہوتا ہے ۔ برطانیہ کے وزیراعظم نے معمولی قانون توڑنے پر استعفیٰ دیا ۔
عمران خان نے کہا افسوس سے کہنا پڑتا ہے پاکستان کی عدالتوں میں انصاف نہیں ملے گا قائداعظم نے اپنی بیماری کا پتہ نہیں چلنے دیا اور قائداعظم نہیں چاہتے تھے کہ ان کی بیماری کی وجہ سے ملک بننے میں رکاوٹ آجائے۔ ہندوستان بھی ہمارے ساتھ ہی آزاد ہوا تھا لیکن اس کے فیصلے دیکھ لیں۔ ہندوستان بھی امریکہ کا اتحادی ہے لیکن ہندوستان نے روس سے سستا تیل خریدا اور غلام ملک پر مسلط کر دیئے گئے ہیں۔ ہماری فیصلے وہ ہونے چاہیئیں جس سے قوم کا فائدہ ہو۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ کی جنگ میں پڑ کر ہم نے اپنے 80 ہزار لوگ مروائے اور ان کے دور میں 400 ڈرون حملے ہوئے، ان 2 خاندانوں کا مفاد صرف پیسہ بنانے اور باہر منتقل کرنے میں ہے جبکہ جہاں قانون کی حکمرانی نہ ہو وہ ملک بنانا ری پبلک بن جاتا ہے اور ارشد شریف ملک کے ساتھ ہونے والی سازش کو سامنے لے کر آ رہا تھا، ارشد شریف کی والدہ کو معلوم ہے کہ کون اسے دھمکیاں دے رہا تھا۔

انہوں ںے کہا کہ میں سابق وزیر اعظم ہوں لیکن ایف آئی آر درج نہیں کروا سکا اور اس صورتحال میں ملک کبھی کامیاب نہیں ہو سکتا، پاکستانی بیرون ملک جانا پسند کرتے ہیں کیونکہ وہاں خوشحالی ہے اور برطانیہ میں کوئی قبضہ گروپ نہیں ہے جبکہ برطانوی وزیراعظم نے قانون کی چھوٹی سی خلاف ورزی پر استعفیٰ دے دیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
%d bloggers like this: