پاکستانتازہ ترین

4 لوگوں نے بند کمرے میں مجھے مروانے کا فیصلہ کیا، مجھے چار گولیاں لگیں. عمران خان

تحریک انٖصاف (پی ٹی آئی) کے چئیرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان کہا ہے ن لوگوں نے وزیر آباد یا گجرات میں مجھے مارنے کا پلان کیا ہوا تھا اور مجھ پر توہین رسالت کا الزام لگا کر سلمان تاثیر کی طرح قتل کروانے کا منصوبہ بنایا گیا۔ مجھے دو دن پہلے ہی معلوم ہو گیا تھا کہ مجھ پر گوجرانوالہ یا وزیر آباد میں حملہ کیا جائے گا۔ انہوں نے وزیر آباد یا گجرات میں مارنے کا پلان بنایا ہوا تھا اور اس حملے میں مجھے چار گولیاں لگی ہیں

انہوں نے قاتلانہ حملے میں زخمی ہونے کے بعد پہلے ویڈیو پیغام میں کہا ہے حکومت کبھی تحریک عدم اعتماد میں ناکام نہیں ہوتی، وسائل ہوتے ہیں، میرے خلاف تحریک عدم اعتماد کو کامیاب بنانے کے لیے ارکان کی منڈی لگی تھی، ہم زیادہ پیسے دے سکتے ہیں لیکن ہم نے فیصلہ کیا ہم ایسا نہیں کریں گے۔

عوام کا پیسا چوری ہوا اور مشرف نے انہیں این آر او دے دیا، 17 جولائی کے ضمنی الیکشن میں حکومتی مشینری استعمال کی گئی جبکہ الیکشن کمیشن نے ای وی ایم کو روکا۔عمران خان نے کہا کہ نظر آرہا ہے کہ قوم اس حکومت کو مسترد کرچکی ہے، توشہ خانہ کا سارا ریکارڈ توشہ خانہ میں موجود ہے جبکہ مسلم لیگ (ن) کے رہنما دنیا کے سب سے مہنگے ترین اپارٹمنٹس میں رہ رہے ہیں۔

سابق وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ایون فیلڈ اپارٹمنٹس کہاں سے خریدے گئے، آج تک انہوں نے ایک ڈاکومنٹ جمع نہیں کرایا، کیا ان کے لیے لانگ مارچ جائزہے؟ ہمارے لیے نہیں؟، چیف الیکشن کمشنر نواز شریف کا نوکر ہے۔ الیکشن کمشن کو ہمیں نااہل کرنے کے لیے استعمال کیا گیا، ان سب کے باوجود پی ٹی آئی جیت گئی۔ 4 لوگوں نے بند کمرے میں مجھے مروانے کا فیصلہ کیا، ویڈیو بنا کر رکھی ہے، کہا تھا مجھے کچھ ہوا تو ویڈیوز جاری کردینا، پہلے تو پروجیکٹ کیا گیا کہ عمران خان نے دین کی توہین کی ہے اس کے بعد منصوبہ تھا کہ دینی انتہا پسند نے قتل کردیا جس طرح سلمان تاثیر کو کیا گیا۔
عمران خان نے کہا توشہ خانہ کا سارا ریکارڈ موجود ہے، اس میں چوری کی کوئی گنجائش نہیں، توشہ خانہ کیس میں ڈس کوالیفائی کر دیا گیا، اس لیے نااہل کیا گیا نوازشریف کا حکم تھا، نواز شریف نے اربوں روپے چوری کیے، اسحاق ڈار کا بیان حلفی موجود ہے شریف خاندان کے لیے منی لانڈرنگ کرتا رہا، حدیبیہ پیپرزملزکیس میں بھی این آر او مل جاتا ہے، پاناما انکشافات میں پتا چلا ایون فیلڈ فلیٹس نواز شریف کے ہیں، آج تک نوازشریف نے فلیٹ کی ایک منی ٹریل نہیں دی، میں نے عدالت کوچالیس سال کا اپنا ریکارڈ پیش کیا۔

انہوں نے کہا میرا موازنہ نوازشریف سے کر رہے ہیں، نوازشریف کہہ رہا ہے لیول پلائنگ فیلڈ نہیں، وہ چاہتا ہے الیکشن کمیشن مجھے نااہل کرے، چیف الیکشن کمشنر شریف خاندان کا نوکر ہے، مجھ پرغلط الزام لگائے، چیف الیکشن کمشنر پر ہرجانہ دائر کروں گا، تحریک انصاف نے 40 لاکھ ڈونرزکا ریکارڈ دیا، باقی کسی پارٹی نے اپنے کسی ڈونرزکا ریکارڈ نہیں دیا، مشرف دورمیں مجھے جیل ڈالا گیا، آج جو کچھ ہو رہا ہے ایسا پرویز مشرف کے مارشل لا میں بھی نہیں ہوا تھا، میری نظرمیں ارشد شریف پاکستان کا نمبر انویسٹی گیشن صحافی تھا، مجھے صحافیوں اور ارشد شریف کے گھروالوں کو پتا ہے کون اس کے پیچھے پڑا ہوا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
%d bloggers like this: