پاکستانتازہ ترین

عمران خان نے غداری کی، کارروائی ضرور ہوگی. شہباز شریف

وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ آڈیو لیکس میں عمران خان کی طرف سے ملک سے غداری کی گئی ان کے خلاف تحقیقات ہو رہی ہے ۔ان کے خلاف ضرور کارروائی ہوگی۔ آرمی چیف کی تعیناتی قانون اور آئین کے مطابق ہوگی ۔نواز شریف کو جب ڈاکٹرز اجازت دیں گے تو واپس آجائیں گے ۔

اسلام آباد میں وفاقی وزرا کے ساتھ نیوز کانفرنس میں وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ عمران نیازی فراڈیا ہے ،فراڈیا ہے ۔ سر سے پاؤں تک جھوٹا ہے۔ عمران خان نے خود اور اپنے رشتہ داروں کو این آر او دیا ۔ یہ شخص اگر دوبارہ ملک پر مسلط ہوا تو پاکستان نہیں رہے گا۔
شہباز شریف نے کہا کہ ملک میں مہنگائی کم ہوگی۔ نئے وزیر خزانہ آئے ہیں ڈالر نیچے آیا ہے ۔ مہنگائی بھی کم ہوگی۔ روپے کی قیمت کم کرنے میں ملوث بینکوں کے خلاف کارروائی ہوگی۔
شہباز شریف نے کہا عمران خان فراڈیا ہے ، سر سے پاوں تک فراڈیہ ہے ، میں خدا کی قسم کھا کر کہتا ہوں جس نے قوم کی قسمت اور معاش سے کھیلا، اس نے قوم کو تنہائی کا شکار بنادیا، اس نے فوج کو تقسیم کرنے کی کوشش کی، نیوٹرل چوکیدار جیسے الفاظ استعمال کیئے۔ صحافی کے سوال کا جواب دیتے ہوئے شہبازشریف نے کہا کہ قانون میں آرمی چیف کی تعیناتی سے متعلق درج ہے ،اس کے مطابق فیصلہ ہو گا، آپ پریشان مت ہوں۔ وزیراعظم شہبازشریف نے کہاہے کہ عدم اعتماد پر ووٹنگ ہونا تھی ، تمام واقعات سے آپ آگاہ ہیں، اس دن ڈپٹی سپیکر قاسم سوری اجلاس کی صدارت کر رہے تھے ، ووٹنگ سے پہلے اس وقت کے وزیر اطلاعات کھڑے ہوئے اور انہوں نےبیان پڑھا، کہا کہ سازش ہوئی ہے اس حکومت کے خلاف، اس سازش کے تانے بانے غیر ملکی طاقت اور اپوزیشن سے جڑتے ہیں ، اسی وقت قاسم سوری نے لکھا ہوا بیان پڑھا اور کہا کہ میں یہ تحریک اس سازش کی کہانی کی بنیاد پر مسترد کرتاہوں ، نہ ہم سے پوچھا گیا نہ کسی اور سے پوچھا گیا ، میں قائد حزب اختلاف تھا میں چیختا رہ گیا ، فوری طور پر عمران خان ٹی وی سکرین پر نمودار ہوئے اور کہا کہ اسمبلی توڑ رہاہوں ، بیس منٹ کے اندر صدر پاکستان نے اسمبلی کو توڑنے کی سمری جاری کر دی ۔ اس طرح کے اہم معاملات صدر کے پاس ہفتوں پڑے رہتے ہیں لیکن اسمبلی انہوں نے بیس منٹ میں توڑ دی ، خود اندازہ لگائیں کہ سپیکر یا ڈپٹی سپیکر نے سازش کی کہانی جو بیان کی ،وزیر اطلاعات کی زبانی ، اس کو من و عن مان کر بغیر پوچھے کہ جواب کون دے گا، فوری تحریک کو مسترد کیا ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
%d bloggers like this: