کالم

کھادا پیتا راہے پیا

نوید مغل

مملکت خدادادپاکستان کا کوئی حال نہیں ہے ۔ ہر ادارے محکمے میں اوپر سے لیکر نیچے تک چور ، ڈاکو اورلٹیرے بیٹھے ہوئے ہیںجو کرپشن ، لوٹ مار،چوربازاری،بے ایمانی اور بددیانتی سے اس کو لے بیٹھے ہیں اور اس کے پلے ککھ نہیں چھوڑا۔اپنے پیٹ کا ایندھن ہوس زر سے بھرنے کی غرض سے ملکی معیشت کو تباہی کے دہانے پر لے گئے ۔ملک کو کمزور کر گئے ۔ اپنی عیاشیوں کی خاطر ملک کا بچہ بچہ مقروض کردیا۔جو آنے والا ہے اسے بھی دنیا میں جنم لیتے ہی قرض کی دلدل میں پھنسا دیا ۔ اسے کسی نے نہیں لوٹا۔ہر ایک نے اسے کھایا ، ۔بیدردی سے نوچا۔اس کو زخم لگایا۔اس کی اور قوم کی عزت کوداؤ پر لگایا۔اپنے ذاتی سکون وآرام کےلئے ملک کے وقار کو خراب کیا ۔کسی نے بھی اسے معاف نہیں کیا ۔ اسے پاکستان کا مطلب کیا”لاالااللہ“ بنانے کی بجائے” کھاداپیتا راہے پیا“ کا اہل بنایا ۔ ملک کی بھولی بسری عوام کے حقوق وفرائض پر کوئی توجہ نہ دی مگر اپنے اقتدار کو طول دینے کےلئے ہر حربہ استعمال کیا۔ اگر خوش قسمتی سے کوئی اہل ملا بھی تو اسے کام نہیں کرنے دیا گیا،ٹکنے نہیں دیا گیا۔ یہاں چڑھتے سورج کو سلام کرنے والا ہی کامیاب اور سسٹم کو ٹھیک کرنے اور حالات میںبہتری کا خواہشمند ہی ناکام ٹھہرا۔یہاں میڈیا میں ہرآن لمحہ بہ لمحہ بدلتی صورتحال میں ہر آن پلک جھپکتے ہی اپنے انداز، طورا طوار ، خیال اورسوچ ووچار کے دھارے ذاتی مفادات کی خاطر بدلنے والے میڈیا پرسن کامیاب ٹھہرے ۔ پاکستان ایسی جگہ ہے جہاں جھوٹ آسان اورسچ بولنامحال ہے۔ جھوٹ تمام تر دلفریبیوں کے ساتھ کامیاب اور سچ تمام تر سچائیوں کے باوجود ناکام۔ پاکستان میں اگر کوئی کام مشکل ہے تووہ سچ بولنا ہے جو آپ کسی طرح بھی موجودہ پاکستانی سسٹم میںقطعی طور پر بولنے کی پوزیشن میں نہیں ہیں۔ملک میں ہونےوالے الیکشن کیسے تھے ،کتنے فری اینڈ فیئر تھے،کس جگہ انصاف ہوا،کہاں شب خون مارا گیا،بس وہی کچھ بتایا گیاجس کا حکم ہوا ، دوسرا کچھ بھی نہیںہے۔بس وہی کچھ سامنے لایا گیا جو روزِ اول سے پاکستان کا نصیب ہے ۔ اپنی کوئی رائے تجزیہ اورخیال نہیں،قرآن پاک کی سورہ البقرہ کی اس آیت کی طرح ” وہ گونگے ، بہرے، اندھے ہیںپس واپس نہیں لوٹیں گے“ ۔ یہ صورتحال انتہائی خطرناک ہے اور پاکستان ایسے جھٹکوں کا عادی ہوچکا ہے ۔ بس لوٹنا،لوٹنا،لوٹنا اور کشکول گدائی ہی مملکت پاکستان کی قسمت میں لکھا ہے اور یہ سلسلہ شروع سے لیکر اب تلک جاری وساری ہے ۔خدااس ارض وطن پاکستان کی خیر کرے ،اس پرکیا عجب وقت آن پڑا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Diyarbakır koltuk yıkama hindi sex