پاکستانسیاست

کارروائیاں نہ رکیں تو افغانستان میں دہشگردوں پر حملہ کرینگے:وزیردفاع

دورہ کابل کے دوران بھی طالبان کو بتایا تھا اگروہ ٹی ٹی پی کوروکنے میں ناکام رہے تو پاکستان خود کارروائی کریگا کچھ مقامات پر ہمیں دہشتگردوں کو نشانہ بنایا ہوگا،زیادہ دیر ایسی صورتحال برداشت نہیں کرسکتے : انٹرویو

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک )وزیر دفاع خواجہ آصف نے افغان طالبان کو خبردار کیا ہے کہ اگر افغانستان عسکریت پسندوں کو لگام دینے میں ناکام رہا تو پھر پاکستان ملک کے اندر دہشت گردوں کے ٹھکانوں پر حملہ کرے گا ۔امریکی نشریاتی ادارے کو خصوصی انٹرویو میں وزیر دفاع خواجہ آصف نے کہا کہ فروری میں دورہ افغانستان پر انہوں نے افغان حکام کو یاد دہائی کرائی تھی کہ پاکستان کے خلاف دہشت گردی کی کارروائیاں کرنے یا ان کا منصوبہ کرنے کے لیے افغان سرزمین کا استعمال کرنے والے دہشت گردوں کو روکنے کے پیش نظر سرحد پار سیکیورٹی عزائم پر قائم رہیں یا پھر پاکستان کارروائی کرے گا۔خواجہ آصف نے اپنی اس بات کی تائید کی کہ کالعدم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) پاکستان میں دہشت گردی کے حملے کرنے کے لیے افغان سرزمین کا استعمال کر رہے ہیں۔خواجہ آصف نے کہا کہ گزشتہ دورے پر ہم نے کابل کو یہ پیغام پہنچایا تھا کہ، مہربانی کریں، ہمارے پڑوسی اور بھائی ہونے کے ناطے، جو کچھ بھی افغان سرزمین سے ہو رہا ہے وہ آپ کی ذمہ داری ہے۔انہوں نے کہا کہاگر ایسا نہیں ہوتا تو کچھ مقامات پر ہمیں کچھ اقدامات کرنے ہوں گے، جو یقینی طور پر افغان سرزمین پر دہشت گردوں کی پناہ گاہیں ہوں گی جہاں ہمیں انہیں نشانہ بنانا پڑے گا، ہمیں انہیں اس لیے نشانہ بنانا ہوگا کیونکہ ہم زیادہ دیر تک ایسی صورتحال کو برداشت نہیں کر سکتے۔خواجہ آصف نے کہا کہ افغانوں حکام نے اس پر بہت ہی اچھا ردعمل دیا۔خواجہ آصف نے کہا کہ افغان طالبان نے بہت اچھا جواب دیا، شاید ان کے لیے تحریک طالبان پاکستان کو اس مرحلے سے منقطع کرنے میں وقت لگے گا جو کہ وہ یقیناً منقطع کرنا چاہتے ہیں اور یہ میرا تاثر ہے کہ وہ منقطع کرنا چاہتے ہیں لیکن وہ اس کشمکش میں ہیں۔وزیر دفاع نے مزید کہا کہ ’لیکن وہ اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کر رہے ہیں اور ہم ان کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہیں اور ہم ایسی صورتحال پر نہیں جانا چاہتے جہاں ٹی ٹی پی کے ساتھ معاملات کشیدہ ہوں اور ہم ایسا کچھ کریں جو کابل میں ہمارے پڑوسیوں اور بھائیوں کو پسند نہ ہو۔انٹرویوں کے دروان جب خواجہ آصف سے پوچھا گیا کہ کیا ان کو افغان طالبان کی اس بات پر اعتماد ہے کہ پاکستان میں دہشت گردی کی کارروائیاں کرنے کے لیے ٹی ٹی پی افغان سرزمین کا استعمال نہیں کر رہی۔خواجہ آصف نے اس سوال پر جواب دیا کہ ’ٹی ٹی پی ابھی بھی

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
%d bloggers like this: