کالم

وزیراعلیٰ میڈیا گریجویٹس انٹرنشپ پروگرام

محمد حسیب طارق

پنجاب بھر میں طلبہ و طالبات کی کثیر تعداد ماس کمیونیکیشن کے شعبہ سے منسلک ہے اور سالانہ ہزاروں کی تعداد میں اس میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ اس شعبہ میں گریجویشن کرنے والے طلبہ میں کم و پیش 80 فیصد نوجوان شامل ہیں۔ جو اپنے حاصل کردہ ہنر سے قوم و ملک کی خدمت کرنے کے لیے حکومتِ وقت کی جانب سے روزگار کے مواقع فراہم کرنے کے طلبگار رہتے ہیں۔ نسلِ نو کےبڑھتے رجحان کے پیشِ نظر وزیرِ اعلیٰ پنجاب کی ہدایات پر ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ، محکمہ تعلقاتِ عامہ(DGPR)، نے 2021 میں وزیرِ اعلیٰ انٹرنشپ پروگرام براۓ 500 نوجوان میڈیا گریجویٹس کا لائحہ عمل تیار کیا۔ جسے عوام کی خدمت کے لیے کوشاں ادارے، پلیننگ اینڈ ڈویلپمنٹ(P&D) کے ذمہ دار افسران کی جانب سے پرکھنے کے بعد وزیرِ اعلیٰ پنجاب اور کابینہ کی جانب سے منظور کردیا گیا۔ چونکہ محکمہ تعلقاتِ عامہ(DGPR) پنجاب کے تمام اضلاع میں ڈویژنل انفارمیشن آفسز اور ڈسٹرکٹ انفارمیشن آفسز کے ذریعے متحرک ہے، اس لیے اس پروگرام کی باگ ڈوراس ادارے کے سپرد کی گئی۔اس منصوبے کے توّسل سے نوجوان میڈیا گریجویٹس کو جدید ٹریننگ فراہم کرنے کے لیے کُل 67 ارب روپے کی خطیر رقم مختص کی گئی۔ معاشی سال 22_2021 میں پنجاب حکومت نے اس منصوبے کے لیے 30 ارب کے فنڈز کا اعلان کیا۔ جبکہ معاشی سال 23-2022 میں اس منصوبے کی گزشتہ سال کی کامیاب کارکردگی کی بنیاد پر بقیہ 37 ارب نوجوان طالبِ علموں کی تربیت کے لیے وقف کر دیے گئے۔ اس دو سالہ تربیتی منصوبے کے ذریعے پانچ سو نوجوان گریجویٹس کو مستفید کرنے کے لیے انہیں ایک ایک سو کی تعداد میں پانچ حصوں میں تقسیم کردیا گیا۔ جس میں سے 10فیصد نشستیں صحافیوں کے بچوں کے لیے مختص کی گئیں اور اسکے ساتھ ساتھ 50 فیصد خواتین کی تعداد کو بھی یقینی بنایا گیا۔ تمام نوجوان گریجویٹس کو حکومتِ پنجاب کی جانب سے متعارف کردہ اس موقع کے متعلق آگاہ کرنے کے لیے مختلف اخبارات اور نیوز چینلز میں اشتہار شائع کیے گئے۔ پنجاب کے تمام اضلاع سے نوجوانوں کی باآسانی اس پروگرام میں شرکت کو یقینی بنانے کے لیے آن لائن پورٹل تشکیل دیا گیا۔ جسے بہترین بنانے کے لیے پنجاب انفارمیشن اینڈ ٹیکنالوجی بورڈ (PITB) کی خدمات حاصل کی گئیں۔ایک سو کی تعداد پر مشتمل ہر بیج میں طالبِ علموں کو تین ماہ تک انٹرنشپ کروائی گئی اور ماہانہ 20,000 روپے وظیفہ دیا گیا۔بلآخر تمام تیاریاں مکمل کرنے کے بعد اکتوبر، 2021 میں ایک سو انٹرنز کے پہلے بیج کا آغاز کیا گیا۔ اس میں پنجاب بھر
سے قریباً سات ہزار طلبا نے حصہ لیا تھا جس میں سے ایک سو ٹاپ میرٹ انٹرنز کو چنا گیا۔ ان تمام طلبا کو انکے ڈومیسائل کے مطابق پنجاب کے مختلف اضلاع میں انفارمیشن آفسز میں تین ماہ تک انٹرنشپ کروائی گئی۔انہیں الیکٹرونک، پرنٹ اور ڈیجیٹل میڈیا کے ذریعے کس طرح روزگار حاصل کیا جا سکتا ہے سکھایا گیا۔ اس بیج کے تمام بچوں کو تین ماہ کے اس دورانیے میں پبلک ریلیشن آفس کے مختلف سیکشنز میں کیے جانے والے کاموں میں آنے والی رکاوٹوں، پریشانیوں اور اسے حل کرنے کے طریقوں سے روشناس کروایا گیا۔ بلآخر ادارے کی جانب سے تمام انٹرنز کو بذریعہ چیک طے شدہ معاوضہ اور انٹرنشپ سرٹیفکیٹ دیا گیا۔ فروری، 2022 میں ایک سو انٹرنز کے دوسرے بیج کا آغاز بھی کر دیا گیا۔ جس سے پنجاب بھر کے گزشتہ سو نوجوان گریجویٹس کے علاوہ مزید سو نوجوان گریجویٹس مستفید ہوۓ۔ ان طلبا کو بھی الیکٹرونک پرنٹ اور ڈیجیٹل میڈیا کی اہمیت کے حوالے سے مختلف ٹریننگ سیشنز منعقد کرکے آگاہ کیا گیا۔ قابل ٹرینرز کی موجودگی میں انہیں نیوز پیکج اور ڈاکومینٹری بنانا سکھایا گیا۔ اس انٹرنشپ پروگرام میں تمام انٹرنز کو اپنے لکھے ہوۓ کالم بآسانی مختلف اخباروں میں چھپوانے کی سہولت دی گئی۔مارچ، 2022 میں اس پروگرام کے تیسرے بیج کا آغاز بھی کر دیا۔ ان تمام طلبا کو ایک ایک ہفتے کے لیے روانگی میں ڈی۔جی۔پی۔ آر کے مختلف شعبوں میں کام کرنے کا طریقہ سکھایا گیا اور پھر باقائدہ افسران کی نگرانی میں ان طلبا سے کام لیا گیا۔ اب تک اس انٹرنشپ پروگرام سے مستفید ہونے والے کم و بیش تین سو انٹرنز کے لیے ایک سیمینار منعقد کیا گیا۔ جس میں پنجاب بھر سے تمام انٹرنز اور نامور میڈیا ہائوسز کے نمائندوں نے شرکت کی۔ مختلف گروپس کی شکل میں طلبا اس سیمینار میں شرکت کے ساتھ ساتھ مینیجمینٹ کا بھی حصہ بنے اور مستفید ہوۓ۔ اس سیمینار میں تمام طلبا کی شرکت کو یقینی بنانے کے ادارے نے ٹرانسپورٹ مہیا کی اور اسکے ساتھ طویل سفر طے کرکے شہرِ لاہور آنے والے انٹرنز کے کھانے سمیت دوسری تمام سہولیات کا خیال رکھا گیا۔ اس سیمینار میں دوسرے اور تیسرے بیج میں چنے گۓ انٹرنز کو طے شدہ معاوضہ بزریعہ چیک دیا گیا۔ اسکے علاوہ تمام طلبا میں انٹرنشپ سرٹیفکیٹس تقسیم کیے گۓ۔ معاشی سال 2022-23 میں مزید دو سو فریش گریجویٹس کو بھی اس اعلیٰ انٹرنشپ پروگرام میں سو سو کی تعداد پر مشتمل دو بیج بنا کر مستفید کیا گیا۔ انہیں مجموعی طور پر چالیس کے قریب ٹریننگ سیشنز اور مختلف سرکاری اداروں کا دورہ کروا کر انکا کام، انکی اہمیت اور میڈیا کے اس میں کردار سے آگاہ کیا گیا۔ ان انٹرنز نے ستر سے زائد نیوز پیکج لکھے، ڈائرکٹ کیے اور پھر جدید آلات کو استعمال کرتے ہوئے ادارے کے معزز افسران کی نگرانی میں فلمایا۔ جس کے باعث ان طلبا نے فیلڈ میں کام کرتے وقت آنے والے مسائل کا سامنا کرنے کی مہارت حاصل کی۔ بلآخر ان تمام انٹرنز کو بھی حکومتِ پنجاب کی جانب سے مقرر کردہ وظیفہ بزریعہ چیک دے دیا گیا ہے۔ نوجوان نسل ماس کمیونیکیشن اور دیگر شعبوں میں اس طرح کے مزید کامیاب پروجیکٹس شروع کرنے کے لیے حکومتِ وقت کی منتظر ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Diyarbakır koltuk yıkama hindi sex