پاکستان

نواز شریف کی افغان مشیر سے ملاقات، اسحاق ڈار نے خاموشی توڑ دی

لندن : سابق وزیراعظم نوازشریف سے افغانستان کے قومی سلامتی کے مشیر حمد اللہ محب نے ملاقات کی جس کی تصاویر انٹرنیٹ پر آئیں تو تحریک انصاف کی حکومت کی جانب سے اعتراضات دیکھنے کو ملے تاہم اب سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے اس معاملے پر خاموشی توڑتے ہوئے وضاحتی بیان جاری کر دیا.
ان سے لندن میں صحافیوں نے پوچھا کہ نوازشریف نے افغانستان کے نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر سے ملاقات کیوں کی ؟ جس پر انہوں نے کہا کہ کچھ چیزوں کا فیصلہ سو چ سمجھ کرکرنا ہوتاہے ، انہوں نے کئی مہینے پہلے ہم سے ملنے کا وقت مانگا تھا ، ان کی یوکے کے نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر ، ڈائننگ سٹریٹ اور یہاں کے آرمی چیف سے ملاقات طے ہو رہی تھی ، یہ ڈویلپمنٹ ضرور ہوئی ہے ، اس پر ہم نے بہت غور سے سوچا کہ حکومت تو ہر چیز تباہی کی طرف لے جارہی ہے ، کیا ہمیں نقصانات کو کنٹرول کرنا چاہیے یا پھر اسے چھوڑ دینا چاہیے ۔
اسحاق ڈار نے کہا نوازشریف نے بہت ہی دانشمندانہ فیصلہ کیا ، ہمیں انہوں نے ایک ہفتہ قبل اطلاع دی کہ ہم آ رہے ہیں ، یہ حکومت فارن پالیسی کو جہاں لے جارہی ہے اور اس نہج پر لے آئی ہے کہ افغانستان جیسے ملک سے غیر مناسب بیانات آ رہے ہیں ،میاں صاحب نے سمجھا کہ انہیں سمجھایا جائے اور انہوں نے بھی اعتراف کیا کہ نوازشریف کے تینوں ادوار میں افغانستان سے متعلق بہترین پالیسی رہی ہے ۔ حکومت کو تو ن لیگ کی کوئی چیز پسند نہیں آتی، ہم ان سے نپٹ لیں گے اور نپٹ رہے ہیں ۔
،

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Diyarbakır koltuk yıkama hindi sex