ادب

منقبت ام المؤمنین حضرت خدیجۃ الکبری

مفتی ظہور احمد قادری کراچی

محسن ہیں آپ بیشک اسلام کی خدیجہ
شاہ دنا کا بھی ہے فرماں یہی خدیجہ
محبوب رب اکبر کرتے تھے ذکر اکثر
اُمت کے واسطے تھیں بے حد غنی خدیجہ
ہے عرش پہ یہ شہرہ ، شاداں ملک ہیں سارے
شادی رچی ہوئی ہے دلہن بنی خدیجہ
سب مومنوں کی ماں ہیں طابہ بھی طاہرہ بھی
پائی ہے تو نے ایسی پاکیزگی خدیجہ
قلب نبی کو جب بھی کوئی ملال آیا
وجہ فرح و مسکان فوراً بنی خدیجہ
دنیا سے تیرا جانا بے چین کر گیا یوں
یہ سال، سالِ غم ہے بولے نبی خدیجہ
جبریل کی زبانی رب نے سلام بھیجا
کیسے بیاں کروں میں مدحت تری خدیجہ
ٹکڑوں سے تیرے در کے پالتا ہے میرا گھر بھر
میں گدائے پنجتن ہوں مجھے کیا کمی خدیجہ
خدمت میں تیری اے ماں امید لے کے آیا
جھولی ہے میری خالی اور تو سخی خدیجہ
صدقے میں مصطفیٰ کے ہوں دور ظلمتیں سب
اُمت پر آپڑی ہے ہے مشکل کڑی خدیجہ
چشم کرم خدا را بیکس ظہور پر بھی
آیا ہے در پہ لے کر بے چارگی خدیجہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Diyarbakır koltuk yıkama hindi sex