پاکستانتازہ ترین

عثمان ڈار کی والدہ کے الزامات پر مسلم لیگ ن کے رہنماء خواجہ آصف کا بیان آگیا۔

تحریک انصاف کے دور حکومت میں وزیراعظم کے سپیشل اسسٹنٹ رہنے والے سیاست دان عثمان ڈار کی والدہ کے الزامات پر مسلم لیگ ن کے رہنماء خواجہ آصف کا ردعمل آگیا۔ سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ میرا خاندان دو نسلوں سے مسلم لیگ کے ساتھ وابستہ ہے، وفا میری سیاسی شناخت ہے، میں نے کبھی انتقامی سیاست نہیں کی، اللہ کی مدد سے عوام کی محبت کی سیاست کی ہے، میں نے ہمیشہ اپنے مخالفین کے ساتھ سیاسی جنگ لڑی ہے ذاتیات کی نہیں، میں اپنے مخالفین کے ساتھ اصولوں کی جنگ لڑتا ہوں اور ان کے بزرگوں و اہل خانہ کا احترام کرتا ہوں۔
خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ میں نے مشرف اور عمرانی ادوار میں اپنے سیاسی مخالفین کی درخواستوں پہ دو دفعہ چھ چھ ماہ قید کاٹی، دونوں دفعہ اللہ نے مہربانی کی میں باعزت رہا ہوا اور اپنی قیادت کے ساتھ رشتے کی حرمت کا پاس رکھا، میرے سیاسی مخالفین نے میری بیوی اور بیٹے کے خلاف مقدمے بنائے، انہو ں نے کم از کم 3 درجن پیشیاں بھگتیں، میرے اہل خانہ کو نشانہ بنایا گیا، مجھ پر آئین کے آرٹیکل 6 کی کاروائی کا عمرانی کابینہ نے آغاز کیا وہ بھی میرے سیاسی مخالفین کی درخواست پہ ہوا، اس کی سزا موت ہے۔

اپنے بیان میں سابق وزیر دفاع نے کہا کہ میں اور میرا خاندان کبھی مفرور نہیں ہوا، نواز شریف کے ساتھ غیر متزلزل رشتہ ہے، یہ سیالکوٹ کے باسیوں کی محبت ہے کہ 34سال سے پورے قد سے کھڑا ہوں، اپنے والد مرحوم کی عزت کا پاس رکھا ہے، میں کمزور انسان ہوں اللہ عزت سلامت رکھے اور وفا کے رشتے نبھانے کی ہمت عطا فرمائے۔


خیال رہے کہ عثمان ڈار کی والدہ نے الزام عائد کیا تھا کہ خواجہ آصف نے میرے گھر پر حملہ کروایا ہے، خواجہ آصف نے میرے الیکشن کے کاغذات جمع کرانے کا سن کر آپ نے میرے گھر پر پولیس کے 20 لوگ بھیج دیئے، میں دروازہ نہیں کھول رہی تھی، یہ لوگ دروازہ توڑ کر گھر میں داخل ہوئے، ان لوگوں نے مجھے زدوکوب کیا، میرے سر سے چادر اتاری، میرے بال کھینچے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Diyarbakır koltuk yıkama hindi sex