پاکستانتازہ ترین

سائفر کیس کی سماعت کے دوران شاہ محمود قریشی طیش میں آ گئے

سائفر کیس کی سماعت کے دوران تحریک انصاف کے سینئر رہنما شاہ محمود قریشی طیش میں آ گئے۔

سائفر کیس کی سماعت جج ابوالحسنات ذوالقرنین کر رہے تھ کہ شاہ محمود قریشی روسٹرم پر آگئے اور بولے کہ جج صاحب کی گارنٹی پر میرے ساتھ ہاتھ ہوا ہے۔ تصدیق نہ ہونے پر این اے 150، 151 اور پی پی 218 سے میرے کاغذات مسترد ہوئے۔ میں نے کاغذات نامزدگی کی تصدیق کا کہا، جج صاحب نے کہا میرا حکم نامہ ساتھ لگا دیں، اس کے باوجود میرے کاغذات نامزدگی مسترد کر دیئے گئے۔

جج ابوالحسنات ذوالقرنین نے ریمارکس میں کہا کہ شاہ صاحب ہم نے قانونی طریقہ کار پورا کر دیا تھا۔ پراسیکیوٹر کے درمیان میں بولنے پر شاہ محمود قریشی غصے میں آ گئے اور کہا کہ میں اپنے بنیادی حقوق کی بات کر رہا ہوں، یہ بیچ میں کیوں بول رہے ہیں۔ اس دوران شاہ محمود قریشی اور پراسیکیوٹر رضوان عباسی کے مابین تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا۔

اس پر پراسیکیوٹر رضوان عباسی نے بھی کہا کہ تمھاری کیا اوقات ہے، اس دوران جج ابوالحسنات ذوالقرنین شاہ محمود کو پرسکون رہنے کی تلقین کرتے رہے۔ شاہ محمود نے کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے خلاف درخواست جمع کروا دی۔ جج نے ریمارکس میں کہا کہ یہ درخواست دینا آپ کا حق ہے، آپ کے حقوق آپ کو ملیں گے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Diyarbakır koltuk yıkama hindi sex