کالم

بے آواز کھلی کچہری۔۔۔۔۔۔۔

فہد چودھری

شاباش شکرگڑھ واپڈا تم واقعی باکمال ہو تمہارا مقابلہ ممکن ہی نہیں ناممکن ہے، تم نے جہاں مہنگائی کی چکی میں پستی ہوئی عوام کو وسیع تر ملکی مفادات اور بجلی چوری کی وجہ سے ڈیفالٹ ہوتے ادارے کو سہارا دینے کیلئے شکرگڑھ کے غیور لوگوں کو ایکسٹرا ٹیکس اور تصحیح بل ادا کر کے بغیر کسی چوں چرا کے سالہاسال سے چلتا بجلی چوری کا معمہ حل کرنے کا عادی بنایا بالکل اسی طرح بجلی چوری اور دیگر مسائل سے نمٹنے کیلئے ایک ایسی کھلی کچہری کا انعقاد کیا کہ جس میں’’ فساد‘‘ کےڈر سے نہ تو میڈیا کو بھنک لگنے دی اور نہ ہی عام آدمی کو ۔۔۔ایکسین واپڈا اور ایس سی واپڈا نے عملہ کے تعاون سے اس کھلی کچہری کو انتہائی کامیاب بنایا اور عوام کی بھرپور نمائندگی کی ۔ان دونوں آفیسرز کی صلاحیتوں کو 7 توپوں کی سلامی۔۔قوی یقین ہے کہ اس موقع پر جہاں ایس ای واپڈا نارووال نے نئے آنے والے ایکسین واپڈا کی سابقہ کارکردگی کو سراہا ہو گا وہیں پر ا نہیں سابقہ لوگوں کی کمیوں کوتاہیوں پر پردہ ڈالنے کا ٹارگٹ بھی دیا ہوگا ۔۔۔امید ھے شکرگڑھ واپڈا اپنے سرپرست آفیسرز کیساتھ ملکر کروڑوں کی کرپشن کو شکرگڑھ کے صابر و شاکر اور مالی طور پر مستحکم لوگوں کی جیب سے نکلوا کر انکے حوصلوں کو مزید مستحکم کرنے میں معاون ثابت ہو گی۔
شکرگڑھ واپڈا کی قابل تحسین کارکردگی کو سراہنے کیساتھ ساتھ میں شکرگڑھ کے غیور لوگوں کو اگر داد نہ دوں تو زیادتی ہو گی جنہوں نے اپنے واپڈا ملازمین بھائیوں کا آزمائش کی اس گھڑی میں کہ جب وہ بجلی چوری کی وجہ سے کروڑوں کا ڈیفالٹ بھگتنے جا ر ہے تھے جانی و مالی ساتھ دے کر با ہمی بھائی چارے کی ایک تاریخی مثال رقم کی۔۔۔اور انھیں سرخرو کیا۔۔۔۔کچھ واپڈا دشمن عناصر جو پچھلے دنوں عام آدمی کو واپڈا کے خلاف بہکانے کی مضموم کوشش کر ر ہے تھے اور معصوم لوگوں کے صبر و شکر کا پیمانہ لبریز کرنے کی کوشش کر ر ہے تھے انکو میں بس یہی کہوں گا کہ تم جتنی مرضی کوشش کر لوں اپنے بھائیوں کی کرپشن کو عیاں کر کے ھم خود کو داغدار نہیں ہونے دیں گے۔۔۔ ہم غیرت مند تھے ،غیرت مند ھیں اور غیرت مند ر ہیں گے۔۔۔تم لاکھ کوشش کرو ہم دکھ بانٹنے سے باز نہیں آئیں گے۔۔۔۔ ہم ایک ہیں ، ہم ایک ہیں ، ہمیں خود سے زیادہ اپنے بھائیوں کی ملازمتیں عزیز ہیں۔۔۔۔تمہارے ساتھہم اظہار افسوس ھی کر سکتے ہیں۔۔۔
ستم ظریفئ وقت نے مجھ سے میرا یقین خداوندی اس حد تک چھین لیا ہے کہ
لوگ جب یہ کہتے ہیں کہ خدا دیکھ رہاہے
میں سوچنے لگتا ہوں کیا دیکھ رہا ہے؟

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *