پاکستانتازہ ترین

بیٹی نے گھریلو جھگڑوں سے تنگ آ کراپنی ماں کو ہی موت کے گھاٹ اُتار دیا

بھارت میں 35 سالہ خاتون نے مسلسل جھگڑوں سے تنگ آ کر اپنی 71 سالہ ماں کو بلڈ پریشر کی 30 گولیاں کھلا کر موت کے گھاٹ اتارا اور پھر 40 کلو وزنی اپنی والدہ کو سوٹ کیس میں پیک کیا ،رکشے میں سوار ہو کر تھانے پہنچ گئی اور کہا کہ اس میں میری ماں کی لاش ہے ۔

تفصیلات کے مطابق 7 سالہ بیٹے کی ماں سونالی سین نے پولیس اہلکاروں کے بھی اوسان خطا کر دیئے جن کی قتل کی تحقیقات اور لاشوں کو دیکھنا روزانہ کی ڈیوٹی میں شامل ہے ،سب انسپکٹر سنجیو کمار وہ شخصیت ہیں جن کے پاس سونالی اپنی ماں کی لاش بیگ میں ڈال کر سب سے پہلے پہنچی ، انہیں بھی اوسان بحال کرنے میں کچھ منٹ لگے ،نے بتایا کہ ہم حیرانگی سے اس سوٹ کو دیکھ رہے تھے جو کہ کھلا ہوا تھا اور اس میں ایک بوڑھی خاتون کی لاش تھی جبکہ سونالی بہت ہی اطمینان سے انسپکٹر کے کمر کے دروازے کے ساتھ کھڑی تھی ۔پولیس نے لاش کو پوسٹ مارٹم کیلئے بھجواتے ہوئے مقدمہ درج کر لیا ۔

سونالی کے اہل خانہ اس تمام واردات سے لاعلم تھے ،جبکہ اس کا شوہر کام کے سلسلے میں باہر گیا ہو ا تھا اور بیٹا اور ساس دوسرے کمرے میں تھے ۔سونالی نے پولیس کو بتایا کہ ماں کو قتل کرنے کے بعد وہ لاش کے پاس ایک گھنٹے تک بیٹھی رہی اور گرفتاری پیش کرنے کا فیصلہ کیا ۔ ملزمہ نے مزید بتایا کہ اس نے اپنی ماں ” بیاپال“ کی ایک تصویر سوٹ کیس میں رکھی اور پھر اسے سوٹ میں بند کیا ، شوہر بیٹا اور ساس اس فلیٹ میں 2017 سے رہ رہے تھے ،، سونالی کی ماں بیا پال اس سے قبل کولکتہ میں رہتی تھی اور 2018 میں ان کے ساتھ منتقل ہوئی تھی ، ماں اور ساس کے ساتھ جھگڑا معمول کی بات بن چکا تھا ۔

سونالی نے بتایا کہ اتوار کی شب مجھے بہت غصہ آیا کہ اس زندگی سے تو موت ہی اچھی ہے ، اس کا غصہ اگلی صبح تک بھی برقرار رہا ، اس نے اپنی ماں کو پہلے بلڈ پریشر کی تیس گولیاں کھلائیں اور وہ نیم بے ہوش ہو کر گر پڑی ۔ سونالی نے کہا کہ میں سوچ رہی تھی کہ وہ مر جائے گی لیکن وہ سانس لیتی رہی، پھر میں نے اپنا دوپٹہ لیا اور اس کا گلا گھونٹ دیا ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Diyarbakır koltuk yıkama hindi sex